ایپ پر آن لائن سونا خرید کر پھراسی ایپ والے کو بیچنےکاحکم

اَیپ پر آن لائن جو گولڈ خریدا جاتا ہے اولاً تو وہ خارج میں موجود ہی نہیں ہوتا جس کی وجہ سے اس کی بیع صحیح نہیں ہوگی بالفرض اگر اس کو موجود مان لیں تو اگرچہ بیع صحیح ہو جائے گی لیکن بغیر قبضہ کئے اس کو آگے بیچنا جائز نہیں ہوگا اور یہاں بغیر قبضہ کے ا س کو آگے بیچا جاتا ہے لہٰذا نہ ہی تواس طرح کی بیع جائز ہے اور نہ ہی اس سے حاصل شدہ آمدنی سے نفع اٹھانا جائز ہے۔واللہ اعلم بالصواب۔
(مستفاد: فتاوی دارالعلوم دیوبند
ومنہا في المبیع وہو أن یکون موجوداً فلا ینعقد بیع المعدوم ومالہ خطر العدم ۔ ہندیة: ۳/۵
ناقل✍ہدایت اللہ قاسمی
خادم مدرسہ رشیدیہ ڈنگرا،گیا،بہار
HIDAYATULLAH
TEACHER MADARSA RASHIDIA DANGRA GAYA BIHAR INDIA
نــــوٹ:دیگر مسائل کی جانکاری کے لئے رابطہ بھی کرسکتے ہیں
CONTACT NO
6206649711
🇮🇳🇮🇳🇮🇳🇮🇳🇮🇳🇮🇳

سوشل میڈیا پر ہمیں فالو کریں
سوشل میڈیا پر شیئر کریں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے